ایران کے ایٹمی معاہدے پر دوبارہ مذاکرات نہیں ہو سکتے، فیڈریکا موگرینی

برسلز جدت ویب ڈیسک یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے کہا ہے کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان ہونے والے ایٹمی معاہدے کے بارے میں دوبارہ مذاکرات نہیں ہو سکتے۔فیڈریکا موگرینی نے سکائی نیوزعربی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کے ساتھ طے پانے والے ایٹمی معاہدے کے سلسلے میں12سال تک ہونے والے مذاکرات موثر ثابت ہوئے ہیں اور اب اس معاہدے کے بارے میں دوبارہ مذاکرات نہیں ہو سکتے۔ انھوں نے کہا کہ ایک ایسے معاہدے کو مکمل تحفظ فراہم کرنے کی ضرورت ہے کہ جس پر عمل شروع ہو چکا ہے اور وہ موثر بھی واقع ہوا ہے۔فیڈریکا موگرینی نے کہا کہ ایٹمی معاہدے پر عمل کی نگرانی آئی اے ای اے کررہی ہے اس لئے امریکی یا فرانسیسی صدر کو اس معاہدے کی نگرانی کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔انھوں نے کہا کہ ایٹمی توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی اب تک 7 بار اس بات کی تصدیق کر چکی ہے کہ ایران ایٹمی معاہدے پرعمل کررہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.