دنیا کی کونسی کمپنی کس ملک سے بڑی ہے ؟؟ جانئے اس دلچسپ رپورٹ میں

جدت ویب ڈیسک :دنیا کی سب سے منافع بخش کاروباری کمپنیوں کا موازنہ اگر دنیا کے ممالک سے کیا جائے تو آپ کو جان کر حیرت ہوگی کہ کئی نامور کمپنیاںمالیاتی اعتبارسے دنیا کے کئی ممالک سے بڑی شمار ہوتیں،کچھ اسی طرح کی نامور کمپنیوں کی تفصیل جائیے جو کہ ایک غیر سرکاری تنظیم گلوبل جسٹس نے ترتیب دی ہیں۔
رپورٹ کے مطابق اگر عالمی طور پر دسویں نمبر پر شمار کی جانے والی کارپوریشنBPکو کسی ملک کا درجہ دیا جائے تو وہ دنیا میں 27واں بڑا ملک تصور کیا جاتا ۔اور یہ سوئیٹرز لینڈ سے بڑا ہوتا۔
اگر دنیا کی معروف کمپنی Appleکو کسی ملک کا درجہ حاصل ہوتا تو یہ دنیا کا 25ویں بڑا ملک شمار کیا جاتااور یہ بیلجیم سے بڑا ہوتا۔
اسی طرح اگر دنیا کی مشہور گاڑیاں بنانے والی کمپنی Toyota Motorدنیا میں کسی ملک کی حیثیت رکھتی تو یہ دنیا کا 23ویں بڑا ملک تصور کیا جاتا اور VolksWagenکمپنی جو گاڑیاں بناتی ہے 22ویں نمبر پر ہوتاجبکہ Exxon Mobilکو 21ویں بڑا ملک تصور کیا جاتا۔اور آپ کو یہ جان کر مزید حیرت ہوگی کہ اگر ان تمام کمپنیوں کا مالیاتی حجم مل کر انڈیا سے زیادہ ہوتا۔
اسی طرح اگر پیٹرولیم کمپنی Royal Dutch Shellجو کہ دنیا کی پانچواں بڑا معاشی ادارہ ہے اگر کسی ملک کا درجہ رکھتا تو اس کا نمبر 18واں ہوتا۔جو کہ میکسیکو سے بڑاتصور کیا جاتا۔اگر Sinopec Groupکسی ملک کا درجہ رکھتا تو اس کا نمبر 16واں ہوتا۔China National Petroleumکا نمبر اس دوڑ 15واں جبکہState Gridکا 14واں نمبر ہوتا۔ اور ان تمام کمپنیوں کے اثاثے ملک کر سائوتھ کوریا سے زیادہ ہوتے۔اسی طرح اگر دنیا کی سب سے بڑے گروپ Walmart کو کسی ملک کا درجہ حاصل ہوتا تو اس کا 10واں نمبر ہوتا جو کہ آسٹریلیا اور اسپین سے بڑا تصور کیا جاتا۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.