.شاہد خاقان عباسی کی زندگی پر ایک نظر،جانیے

جدت ویب ڈیسک :شاہد خاقان عباسی پاکستان کے نئے وزیر اعظم منتخب ہوگئے۔مسلم لیگ ن کے رہنما اور نو منتخب عبوری وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی 27 دسمبر 1958 کو کراچی میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے ابتدائی تعلیم کے بعد لارنس کالج مری میں داخلہ لیا، بعد ازاں گریجویشن کے لیے لانس اینجلس یونیورسٹی آف کیلی فورنیا چلے گئے۔شاہد خاقان عباسی اپنے والد کے انتقال کے بعد پہلی بار 1988 میں راولپنڈی کے حلقہ این اے 50 سے پہلی بار رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے۔ بعد ازاں 1990 میں ہونے والے عام انتخابات میں بھی وہ دوسری بار اسمبلی کا حصہ بنے۔پھر 1993 میں وہ تیسری بار رکن قومی اسمبلی منتخب ہو کر اسمبلی کا حصہ بنے۔سنہ 1997 میں نواز شریف نے شاہد خاقان عباسی کو قومی ایئر لائن پی آئی اے کا چیئرمین منتخب کیا۔سنہ 1999 میں مشرف کی جانب سے نافذ ہونے والے مارشل لا میں شاہد خاقان عباسی گرفتار بھی ہوئے اور نواز شریف کے ہمراہ جیل میں 2 سال تک قید و بند کی صعوبتیں برداشت۔ 2001 میں عدالت نے انہیں بے گناہ قرار دے کر بری کردیا۔شاہد خاقان عباسی نے مسلم لیگ ن سے علیحدگی اختیار کرنے کے بعد 2002 میں ہونے والے عام انتخابات میں پیپلز پارٹی کے ٹکٹ سے بھی الیکشن میں حصہ لیا تاہم اس میں کامیابی نہ مل سکی اور پہلی بار مقامی حلقے سے آپ کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔سنہ 2008 میں ہونے والے انتخابات میں شاہد خاقان عباسی ایک بار پھر اسمبلی رکن بننے میں کامیاب ہوئے جس کے بعد انہیں اس وقت کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے وفاقی وزیر برائے تجارت اور وزیر پیداوار برائے دفاع کی اضافی ذمہ داریاں تفویض کیں۔سنہ 2008 میں شاہد خاقان پیپلز پارٹی کو الوداع کہہ کر دوبارہ مسلم لیگ ن میں شامل ہوگئے اور 2013 کے انتخابات میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 50 سے چھٹی بار رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے۔سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے شاہد خاقان عباسی کو قدرتی وسائل اور پیٹرولیم کا وزیر مقرر کیا تاہم سپریم کورٹ کی جانب سے نواز شریف کی نا اہلی کا فیصلہ آنے کے بعد مسلم لیگ ن کی قیادت نے انہیں عبوری وزیر اعظم بنانے کی منظوری دی

Leave a Reply

Your email address will not be published.