/

مکانات اور تعمیراتی فنانس کی رفتار بڑھ رہی ہے، اسٹیٹ بینک

کراچی:جدت ویب ڈیسک: تعمیراتی قرضوں کا پورٹ فولیو آخر جون 2020 کے 148 ارب روپے سے بڑھ کر مارچ 2021 تک 202 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے۔
پاکستان کی تاریخ میں مکانات اور تعمیرات کے قرضوں میں اتنی مدت کے دوران اس سے قبل اس قدر نمو دیکھنے میں نہیں آئی ہے۔ بینکوں کی جانب سے مکانات اور تعمیرات کے شعبے کو مجموعی قرضوں کی فراہمی میں مزید خاصا اضافہ متوقع ہے، کیونکہ میرا پاکستان میرا گھر اسکیم کے تحت رہن قرضوں (mortgage finance) کی سرگرمی بڑھ رہی ہے۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے کہا کہ مکانات اور تعمیراتی فنانس کی رفتار بڑھ رہی ہے، بینکوں کا ہاسنگ اور تعمیراتی قرضوں کا پورٹ فولیو آخر جون 2020 کے 148 ارب روپے سے بڑھ کر مارچ 2021 تک 202 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے۔ یہ مالی سال 21 کے 9 مہینوں یا 3 سہ ماہیوں کی مدت میں 54 ارب روپے یا 36 فیصد نمو ظاہر کرتا ہے جبکہ پچھلی سہ ماہیوں میں یہ منجمد رہا تھا۔اسٹیٹ بینک بھی بینکوں کے ساتھ فعال انداز میں مل کر کام کر رہا ہے تا کہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ میرا پاکستان میرا گھر ہاسنگ فنانس اسکیم سے عوام بڑی تعداد میں مستفید ہوں۔اسکیم کے تحت 20 اپریل 2021 تک بینکوں کو عوام الناس کی جانب سے 52 ارب روپے سے زائد قرضوں کے لیے درخواستیں موصول ہو چکی ہیں۔ ان میں سے بینک درخواست گزاروں کو 15 ارب روپے سے زائد فنانسنگ کی منظوری دے چکے ہیں، جبکہ باقی درخواستیں جانچ اور منظوری کے مختلف مراحل میں ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.