چیئرمین ارضیات کمیٹی ارشد حسن کامسمارشادی ہالوں کا دورہ

KDA Karachi

کراچی جدت ویب ڈیسک بلدیہ عظمی کراچی کی اراضیات کمیٹی کے چیئرمین سید ارشد حسن نے اورنگی ٹائون میں مسمار کئے گئے ہالوں اور مختلف عوامی شکایات پر گلشن ضیاء کا تفصیلی دورہ کیا۔ انہوں نے پروجیکٹ ڈائریکٹر اورنگی کو ہدایت کی کہ گلشن بہادر، گلشن حبیب، حق باہو ، باغ ارم اور گلشن ضیاء کے مختلف پروجیکٹ کی دستاویزات چیک کرکے جعلسازیوں کو روکا جائے۔ عوام کو چونا لگانے والے بلڈرز کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جائے۔ ڈپارٹمنٹ کل وقتی گلشن ضیاء میں دفتر قائم کرے۔ عوامی اطلاعات اور محکمہ کی نشاندہی پر انہوں نے اسٹیٹ ایجنسی جو جعلی نقشوں پر عوام کوگمراہ کر رہے ہیں ہدایت کی کہ انہیں سیل کرایا جائے۔ محمکہ نے اسٹیٹ ایجنسیز سے نقشے اور دیگر دستاویزات ضبط کرکے رینجرز اور پولیس کو رپورٹ بھیج دہی ہے۔ سپریم کورٹ کے احکامات پر مسمار کئے گئے ہالوں کے دورے کے موقع پر نیشنل میرج ہال انتظامیہ کا ٹینٹ لگا کر شادی کرنے پر چیئرمین نے سخت برہمی کا مظاہرہ کیا۔ نیشنل میرج ہال توڑنے کے باوجود شادیاں نہ روکنے اور پی ڈی اورنگی کے نوٹس پر ملازمین کو ہراساں کرانے پر ایف آئی آر درج کرائے ۔ توہین عدالت کی درخواست بھی دائر ہوگی۔چیئرمین اراضیات کمیٹی سید ارشد حسن نے اورنگی کا تفصیلی دورہ اراکین لینڈ کمیٹی گلناز فاطمہ، نادر حسین ، نوشاب ، اقبال خان و دیگر کے ہمراہ کیا ۔ ارشد حسن نے دورے کے دوران عوام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی کا ویژن ہے کہ چائنا کٹنگ ، غیر قانونی لیز، سپریم کورٹ کے احکامات پر سختی سے عمل کرایا جائے ۔ ارشد حسن نے مسمار کی گئی جگہوں پر فوری نیا پروپوزل پی ڈی اورنگی کو جمع کرانے کی ہدایت کی ۔ جبکہ انہیں سلاٹر ہائوس ، کیٹل منڈی ۔ انڈس اسپتال ، 25بس اسٹاپوں کے لئے مختص جگہوں ، شاپنگ مال برائے پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ ، تین کمرشل شاہراہوں ، ہلال احمر ، ربی شاپنگ سینٹر (شکایات ) غیر قانونی تعمیرات کا بھی دورہ کیا ۔ جس سے متعلق شکایات اقبال وارثی کی این جی او کی جانب سے موصول ہوئی تھی چیک کیا اور فوری رپورٹ برائے کاروائی کی ہدایت کی۔ انسداد تجاوزات اور پکی آبادی کی کم ریکوری پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایس ایم جاوید ، انسداد تجاوزات کے منیر اختر ، ناصر خان ، سید عالم شاہ کو آخری وارننگ دی بصورت دیگر ریکوری میں فیل انسداد تجاوزات و پکی آبادی کے عملے کو فارغ کردیا جائے ۔ دورے میں لینڈ کمیٹی کے اراکین گلناز فاطمہ ، نادر حسین ، نوشاب ،اقبال خان و دیگر شامل تھے۔ پروجیکٹ ڈائریکٹرمحمد رضوان خان نے کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا کہ گلشن ضیاء میں لینڈ گریبرز سرکاری سرپرستی میں قبضوں کی کوشش کر رہے ہیں جنہیں ناکام بنا دیا جاتا ہے ۔باغ ارم پر تعمیرات اور داتا نگر پر ایک سیاسی جماعت کے جھنڈے لگا کر قبضوں کی کوشش کی گئی کاروائی کرنے گئے تو بڑی تعداد میں لوگ جمع کرکے حملہ کردیا گیا۔ جبکہ کے ایم سی لینڈ پر اسسٹنٹ کمشنرز غیر قانونی مداخلت کر رہے ہیں ہماری مدد کرنے کے بجائے لینڈ گریبرز ضلعی انتظامیہ کا دبائو ہم پر ڈلوا رہے ہیں ۔ انہوں نے گلشن ضیاء کی شکایات کے خاتمے تک لیز بند رکھنے کی سفارش کی جبکہ بتایا کہ ۔ غیر قانونی شادی ہالوں ، موبائل مارکیٹس ، عزیز ملت اسکول ، اسمارٹ اسکول، مہران ہیلتھ سینٹر، ہلال احمر ، یو سی ڈی، اکبر شہید چوک جعلی مدرسے کو پروجیکٹ ڈائریکٹر نوٹس دے چکے ہیں ۔ جبکہ ایک افسر جاوید صدیقی کی غیر قانونی مداخلت کے ثبوت ملے ہیں جو خود کو کے ڈی اے ٹیم بتا کر بھتے اور عوام کو تکالیف میں مبتلا کر رہے ہیں ۔ چیئرمین نے فوری اسکی رپورٹ درج کرانے کی ہدایت کی ۔ اورنگی میں کے ڈی اے کا کوئی عمل دخل نہیں ہے ایسے افراد کی بھرپور سرکوبی کی جائے۔ پروجیکٹ ڈائریکٹر اورنگی محمد رضوان خان نے کہا کہ باغ ارم ، داتا نگر، اکبری چوک ، یونٹ 121، عزیز ملت، اسمارٹ اسکول ، اور دیگر غیر قانونی کاموں کے خلاف فیز ٹو میں سپریم کورٹ کے تازہ احکامات موصولہ 3فروری کے مطابق بھرپور کاروائی شروع کر رہے ہیں ۔ نالوں کے ساتھ تعمیرات بھی توڑی جائیں گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.