سولہ ہزار 540 مزدوروں اور ورکروں کو عرب و خلیجی ممالک سے واپس بھیج دیا گیا

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک سینٹ کوبتایاگیا ہے کہ چین میں پاکستانی سفیر مسعود خالد کو دو سال کی توسیع دی گئی ہے۔جمعہ کو وقفہ سوالات کے دوران سینیٹر چوہدری تنویر خان کے سوال کے جواب میں وزیر مملکت بین الصوبائی رابطہ ڈاکٹر درشن نے بتایا کہ کسی بھی دوا کا زندگی بچانے والی دوا ہونا اس کے ارادتاً استعمال پر منحصر ہے، ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے 70 ہزار رجسٹرڈ مصنوعات کے ساتھ 1500 ڈرگ فارمولیشنز کو رجسٹرڈ کیا گیا جن میں سے تقریباً 400 رجسٹرڈ فارمولیشنز مالیکیولز کو ڈبلیو ایچ او کی لازمی میڈیسن لسٹ 2015ئ کے مطابق موثر ادویات کے درجے میں رکھا گیا ہے۔ وفاقی وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد نے بتایا کہ نیشنل ہائی ویز اور موٹرویز پر موبائل ورکشاپ، ریسکیو سروسز، فرسٹ ایڈ میڈیکل سہولت، ایمبولینس، آگ بجھانے کی سہولت سمیت کئی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں، یہ سہولیات دور دراز علاقوں میں بھی فراہم کرنے کےلئے کوشاں ہیں، ان سہولیات سے آراستہ 6 سینٹر فی الحال موٹروے پر کام کر رہے ہیں۔ وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے کہا کہ چین میں پاکستانی سفیر مسعود خالد کو دو سال کی توسیع دی گئی ہے، بیرون ملک سفارتی مشنز میں مقررہ 3 سال کے لئے ہوتی ہے، سٹینو ٹائپسٹ اور دیگر جونیئر عملہ کو توسیع نہیں دی گئی، وہ اپنی مدت مکمل کر چکے ہیں۔ وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے بتایا کہ یو کے میں سید ابن عباس ہائی کمشنر ہیں، فرسٹ سیکرٹری، سیکنڈ سیکرٹری سمیت 3 افراد نے اپنی مدت مکمل کر لی ہے، انہیں تبدیل کیا جا رہا ہے اور وہ واپس آ رہے ہیں۔ وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد نے بتایا کہ او پی ایف ہر سال ٹیوشن فیس اور دیگر چارجز میں اضافہ نہیں کرتا، دیگر چارجز پر 9 سال بعد نظرثانی کی گئی ہے، 2007ئ میں تین سال بعد ٹیوشن فیس پر نظرثانی کی گئی تھی۔ وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد نے بتایا کہ وزیراعظم کے چکدرہ کالام ایکسپریس وے کی تعمیر کا اعلان کیا تھا، منصوبے کی فزیبلٹی اسٹڈی کےلئے پی ایس ڈی پی 2016-17ئ میں 50 ملین روپے کی نشاندہی کی گئی ۔ 16 مارچ 2017ئ کو این ایچ اے نے فزیبلٹی سٹڈی کا کنٹریکٹ دیا جو 5 ماہ میں مکمل کیا جائے گا۔ وفاقی وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد نے بتایا کہ گزشتہ تین سالوں کے دوران 16 ہزار 540 مزدوروں/ورکروں کو واپس بھیجا گیا ہے یا انہیں ملک بدر کیا گیا ہے، ان میں کویت سے 425، مسقط سے 10 ہزار 379، بحرین سے 833 اور سعودی عرب سے 4 ہزار 903 ورکروں کو واپس بھیجا گیا۔ سینیٹر سحر کامران کے سوال کے جواب میں وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد نے کہا کہ سعودی عرب اور خلیجی ریاستوں میں پاکستانیوں کے لئے مواقع کم ہوئے ہیں، اس کی وجہ سے ان کے اپنے مسائل بھی ہیں، اس وقت 90 لاکھ پاکستانی روزگار اور تعلیم کے سلسلے میں بیرون ملک مقیم ہیں، وزارت سمندر پار پاکستانیز بیرون ملک پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کے لئے اندرون و بیرون ملک بہت سے اقدامات کر رہی ہے، 19 کمرشل ویلفیئر اتاشی کام کر رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.