/

آج 1971 کی جنگ میں جرات و بہادری کی سنہری تاریخ رقم کرنے والے مادر وطن کے عظیم سپوت سپاہی سوار محمد حسین شہید کا 49واں یوم شہادت پورے عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے ۔ڈی جی آئی ایس پی آر کا سوار محمد حسین شہید کو خراج عقیدت

ویب ڈیسک :: ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنے ٹویٹ میں سوار محمد حسین شہید کو ان کی جرات اور شجاعت پر خراج عقیدت پیش کیا ۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنے ٹویٹ پیغام میں کہا کہ سوار محمد حسین شہید نشان حیدر کو ظفر وال شکر گڑھ سیکٹر میں 1971 میں عظیم قربانی پر خراج عقیدت پیش کرتے ہیں ۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ان کی بے جگری سے لڑائی ، بہادری کی وجہ سے بھارتی فورسز کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا جب کہ سوار محمد حسین نے تنہا ہی 16 بھارتی ٹینک تباہ کروائے ۔

آج 1971 کی جنگ میں جرات و بہادری کی سنہری تاریخ رقم کرنے والے مادر وطن کے عظیم سپوت سپاہی سوار محمد حسین شہید کا 49واں یوم شہادت پورے عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے ۔سپاہی سوار محمد حسین شہید 18 جون 1949ء کو ڈھوک پیر بخش ، گجرخان میں پیدا ہوئے ، 3ستمبر 1966ءکو بری فوج میں بحیثیت ڈرائیور، 20لانسر زآرمرڈ رجمنٹ کا حصہ بنے ، سوارحسین کے دل میں ہمیشہ سے لڑاکا سپاہ کے شانہ بشانہ لڑنے کا جذبہ معجزن تھا۔1971ء میں دشمن نے پاک دھرتی پر جنگ مسلط کی تو 20 لانسرز کوضلع نارووال کے دفاع کی ذمہ داری سونپی گئی ، دشمن ٹینکوں اور بھاری ہتھیاروں سے حملہ آور تھا۔ سپاہی سوارنے ظفر وال اور شکر گڑھ کے محاذوں پرسپاہ کواسلحہ، باروداور لڑاکا گشتی دستوں کوپہنچانے کا فریضہ نبھایا۔اِسی دوران سوارمحمد حسین انتہائی پرخطر جھڑپوں میں قائدانہ کردار اداکرتے اور مشین گن سے دشمن کو بھاری نقصان پہنچاتے رہے ، 10دسمبر کو سوار نے دشمن کو ہرڑ خورد گاؤں میں مورچے کھودتے دیکھا یو یونٹ کمانڈر کو اطلاع دی ، اِسی اثناءمیں سوار کے خون نے جوش مارا اورساتھیوں کے ہمراہ تیر بہ ہدف فائرنگ کا آغاز کر دیا۔سوار دشمن کے 16ٹینکوں کی تباہی کی وجہ بنے،اوردشمن کوشدید ہزیمت سے دوچار کردیا۔دشمن آگ بگولہ تھا اورسوار محمد حسین دشمن کی ہر چال ناکام بنانے کا عزم لیے میدان کارزار میں ہر لمحہ چوکس تھے ۔یوں 10دسمبر کو سہ پہر کا وقت تھا کہ دشمن نے ٹینک پر موجود مشین گن سے سوار محمد حسین پر گولیوں کی بوچھاڑ کردی جس سے قوم کا یہ عظیم سپوت جام شہادت نوش کرگیا۔سوار محمد حسین جنجوعہ شہید کی لازوال داستان شجاعت پر اُنہیں نشان حیدر سے نوازا گیا۔