ڈاکٹر رتھ فاؤ کی آخری رسومات تیاریاں مکمل، فوجی عزاز کے ساتھ سپُرد خاک کیا جائے گا

کراچی جدت ویب ڈیسک :: جذام کے مریضوں کے لیے مسیحا‘ میری ایڈیلیڈ سوسائٹی کی سربراہ ڈاکٹر رتھ فاؤ کا جسد خاکی سینٹ پیٹرک کیتھڈرل پہنچا دیا گیا۔ تفصیلات کےمطابق پاکستانیوں کی مُحسن، ڈاکٹر رتھ فاؤ کا جسد خاکی ہولی فیملی اسپتال سے پاک فوج کی خصوصی گاڑی کے ذریعے سینٹ پیٹرک کیتھڈرل پہنچا دیا گیا ہے۔صدرممنون حسین، گورنرسندھ، وزیراعلیٰ سندھ سمیت تینوں مسلح افواج کےنمائندے، کورکمانڈرکراچی، ڈی جی رینجرزسندھ، آئی جی سندھ آخری رسومات میں شریک ہوں گے۔ڈاکٹر رتھ فاؤ 9 ستمبر1929 کو جرمنی کے شہر لیپ زگ میں پیدا ہوئیں تھیں۔ ڈاکٹر رتھ فاؤ 1960 میں پاکستان آئیں اور پھر جذام کے مریضوں کے لیے اپنی ساری زندگی وقف کردی تھی۔ وہ جذام کو مریضوں کو مفت سہولیات فراہم کرتی تھیں۔سینٹ پیٹرک کیتھڈرل میں ڈاکٹررتھ فاؤکی آخری رسومات اداکی جارہی ہیں جبکہ وصیت کےمطابق ڈاکٹررتھ فاؤ کی تدفین سرخ جوڑےمیں کی جائے گی۔عالمی ادارہ صحت کی جانب سے 1996ء میں پاکستان کو کوڑھ کے مرض پر قابو پالینے والے ممالک میں شامل کیا گیا۔ پاکستان کو یہ اعزاز دلانے میں ڈاکٹررتھ فاؤ نے سب سے اہم کردار اداکیا۔انسانیت کی اس عظیم خادمہ ڈاکٹر رتھ فاؤ کو1998 میں اعزازی پاکستانی شہریت دی گئی جبکہ انہیں ہلال امتیاز، ستارہ قائد اعظم ، ہلال پاکستان اورلائیو اچیومنٹ ایوارڈ سے بھی نوازا گیاڈاکٹررتھ فاؤ کی تدفین دوپہرایک بجے گورا قبرستان میں قومی اعزازکےساتھ کی جائےگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.