نرسنگ نتائج میں شفافیت اولین ترجیح ہے‘ خیرالنسا

Examination boards of Pakistan Nursing Council

کراچی سے آصف خان کی رپورٹ٭ نرسنگ نتائج میں شفافیت اولین ترجیح ہے ، کنٹرولر خیر النسائ ری کاؤنٹنگ میں 450 طالب پاس ہوئے ہیں یہ وہ طالب علم ہیں جنکی کاپیاںہمیں مسنگ ملی تھی اور کچھ ری چیک میں پاس ہوئے ہیں ۔ مسنگ کاپیاں ہمیں پہلے والی نرسنگ بورڈ کی ٹیم سے ملی تھی جسے ہم نے بخوبی حل کیا ہے ۔ ہماری کارکردگی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے ۔ تفصیلات کے مطابق سندھ نرسنگ ایگزامنیشن بورڈ نے نرسنگ کے ری کاؤنٹنگ کے نتائج کا اعلان گزشتہ روزکردیا ۔ ری کاؤنٹنگ کےلئے ساڑھے 4 ہزار امیدواروں نے درخواستیں جمع کروائی تھی ۔ جس میں چار سو پچاس طلب علم پاس ہوئے ہیں ۔ روزنامہ جدت سے گفتگو کرتے ہوئے سندھ نرسنگ ایگزامنیشن بورڈ کی کنٹرولر خیرالنسائ کا کہنا تھا کہ انہوں نے اور انکی ٹیم کی کاوشوں سے نرسنگ ری کاؤنٹنگ اور مسنگ کاپیوں کے نتائج مکمل ہوئے کیونکہ ہمیں نرسنگ بورڈ کی پہلی والی ٹیم سے چیک کاپیاں ملی تھی اور یہ ہماری ہی ٹیم کو کریڈٹ جاتا ہے ان کاپیوں کو دوبارہ جانچہ جس سے طالب علموں کا وقت اور پیسے دونوں کو بچایا کچھ طالب علم ری چیکنگ میں پاس بھی ہوئے ہیں جس کا بارہا بتا چکے ہے کہ یہ طالب کو حق حاصل ہے کہ وہ اپنے نتائج کو دوبارہ بھی چیک کروا سکتاہے کچھ لوگ اب بھی طالب علموں کو گمراہ کررہے ہیں کہ کنٹرولر آپ کو سپلی کے امتحانات میں بھی فیل کریں گی ۔ میری سمجھ سے بالا تر ہے کس طرح لوگ افواہیں پھیلا رہے ہیں ۔ انہوں نے طالب علموں سے درخواست کی کہ وہ اپنی تعلیم پر توجہ دیں اور اس قسم کی افواہوں پر کان نہ دھریں بلکہ اب جو امتحانات کے نتائج آئیں گے وہ مکمل طور پر شفاف ہوں گے ۔ کیونکہ یہ تمام امتحانات ہماری نگرانی میں ہوں گے ۔ اس سے پہلے والے امتحانات ہماری نگرانی میں نہیں ہوئے تھے جس سے طالب علموں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا ہمیں طالب علموں کا احساس ہے ہم چاہتے ہیں نرسنگ کے شعبے کا امیج بہتر ہو تاکہ عوام کا نرسنگ کے حوالے سے بننے والے منفی ذہن تبدیل ہوسکیں ۔ مختلف ذرائع سے فون کال اور ایس ایم ایس مجھے گئے کہ آپ نتائج تبدیل کردو ورنہ آپکا تبادلہ کردیا جائے گا لیکن میں اپنے مؤقف پر اٹی ہوئی ہوں اور رہوں گی کیونکہ میں اپنے شعبے سے مخلص ہوں ، نتائج پر کسی قسم کی مصلحت نہیں کی گئی ہے میں اپنی کارکردگی اور ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن ہوں ۔ کچھ بروکر اور کرپٹ مافیا کو ہماری کارکردگی اچھی نہیں لگ رہی ہیں اور وہ طالب علموں کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں جس میں انہیں ناکامی کا منہ ہی دیکھنا پڑے گا ۔ ہمارے نیتیں صاف ہیں ہم سے زیدہ کوئی بھی طالب علموں کا خیر خواہ نہیں ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.