فری بلوچستان ،سوئٹرز لینڈ کی سڑکوں پر پوسٹر لگ گئے سوئزر لینڈ کے سفیر تھامس کولی دفتر خارجہ طلب

جدت ویب ڈیسک :۔جنیوا میں پاکستان مخالف اشتہاری مہم پر سوئزر لینڈ کے سفیر تھامس کولی کو دفتر خارجہ طلب کر کے پاکستان نے اپنا احتجاج ریکارڈ کراتے ہوئے احتجاجی مراسلہ انہیں دیا، دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ اشتہاری مہم پاکستانی سالمیت اور خود مختاری پر حملہ ہے جو کہ عالمی قوانین کی شدید خلاف ورزی ہےغیرملکی میڈیا کے مطابق یہ پوسٹرز سوئس ایڈورٹائزنگ ایجنسی سے بنوائے گئے ہیں اوربلوچستان لبریشن آرمی سے وابستہ’ بلوچستان ہاؤس ‘نامی ایک تنظیم کی طرف سے سڑک کنارے آویزاں کیے گئے۔اور یہ شہر کی مرکزی شاہراہوں پر آویزاں کئے گئے ہیںیہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ بلوچستان لبریشن آرمی کو پاکستان نے دہشتگردتنظیم قراردے رکھاہے ۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ آزاد بلوچستان کے لیے ایک بھر پور مہم چلائی گئی اور اس کے لیے نہ صرف سڑک پر موجود کھمبوں اور ہورڈنگز کا سہارا لیا گیا بلکہ ٹرانسپورٹ پر بھی یہی بینرز لگائے گئے ۔تفصیلات کے مطابق پاکستان نے جنیوامیں پاکستان مخالف اشتہاری مہم پرسوئس حکومت سے شدید احتجاج کیا ہے۔ پاکستان میں تعینات سوئس سفیرتھامس کولی کو دفتر خارجہ طلب کر کے انہیں حکومت پاکستان کا احتجاجی مراسلہ دیا گیا ہے۔ پاکستان نے مطالبہ کیا ہے کہ سوئٹزر لینڈ کسی خود مختار ملک کے خلاف اپنی سرزمین استعمال نہ ہونے دے۔سوئز ر لینڈ کی سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال ہونا عالمی حقوق کی خلاف ورزی ہے ۔ پاکستان مخالف اشتہاری مہم ہماری سالمیت اور خود مختار پر حملہ ہے ۔ سوئس حکومت اس کے خلاف فوری اور مئو ثرکارروائی کرے۔بلوچستان پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے اور ایک دہشت گرد تنظیم کے ذریعے ایسی اشتہار ی مہم پاکستان کے لئے ناقابل برداشت ہے۔

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published.