اسلام آباد ہائیکورٹ :صحت اور بیماریاںمعاملہ کیا ہے ؟

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک اسلام آباد ہائیکورٹ کے زیر اہتمام صحت اور بیماریوں کے حوالے سے سمینار منعقد کیا گیا جس میں بار اور پمز کے درمیان ایم او یو بھی سائن کیا گیا بعدازاں اسلام آباد ہائیکورٹ بار کے صدر عارف چوہدری اور پمز کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر جاوید اکرم نے سیمینار سے خطاب کیا اس موقعہ پر صدر ہائیکورٹ بار کا کہناتھا کہ وکلائ کو ریلیف دینے کی ہر ممکن کوشش کرتا ہوں اسلام آباد کے وکلائ کے لیے کلب کو ترجیحات میں شامل کیابار کونسل ہمارا ادارہ ہے مل کر چلنے میں آسانی ہو گی بار کونسل ہائیکورٹ بار کے معاملات میں مداخلت کرنے کی بجائے وکلائ کی ویلفئیر کے لیے کیے جانےوالے کام کی تعریف کرنی چاہیے نہ کہ تنقید کی جائے تمام وکلائ دوستوں کو یقین دلاتا ہوں وکلائ کی ویلفئیر کے لیے ہر ممکن کوشش جاری رکھونگا اس موقعہ پر پمز ہسپتال کے چیف ایگزیکٹیو ڈاکٹر جاوید کی طرف سے ہائیکورٹ بار کے لیے ہیلتھ سروسز پیکج کا اعلان کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وکلائ کے لیے ہر ممکن تعاون کرین گےدس سال سے وکلائ سے تعلق اور واسطہ ہےایف ایٹ کچہری میں دہشت گردی کا واقعہ ہوا سینکڑوں وکلائ کو پمز لایا گیا ڈاکٹرز ادارے یا بار کونسلز کے مضبوط ہونے پر ہی اچھی روایات قائم ہونگی پمز ہسپتال کو اپ گریڈ کیا اب 19 انسٹیٹیوٹ اس کے ساتھ اٹیچ ہیں انہوں نے وکلائ کو یقین دہانی کروائی کہ 24 گھنٹے میرا نمبر کھلا رہے گا آپ رابطہ کر سکتے ہیں جو ممکن ہوا وہ کرینگے ,وکلائ کی صحت کے لیے ہر تعاون کو تیار ہیں اس کے لئے کسی قسم کے کوئی کارڈ کی ضرورت نہیں ہے وکلائ براہ راست آ کر مل سکتے ہیں سمینار میں وکلائ کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.