کابل میں امریکہ ، افغانستان ، پاکستان سہ فریقی مذاکرات

ISPR

راولپنڈی جدت ویب ڈیسک افغانستان کے دارالحکومت کابل میں امریکہ ‘ افغانستان اور پاکستان کے سہہ فریقی مذاکرات ہوئے جس میں تینوں ملکوں نے دہشت گردی اور داعش کے خاتمے کے عزم پر اکتفا کیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق امریکہ ‘ افغانستان اور پاکستان کے درمیان سہہ فریقی مذاکرات کابل میں ہوئے جس میں پاکستان کے 6 رکنی وفد نے مذاکرات میں شرکت کی جس کی قیادت ’’ڈی جی ایم او ‘‘ میجر جنرل ساحر شمشاد مرزا نے کی۔ سہ فریقی مذاکرات افغانستان کی وزارت دفاع میں ہوئے جس میں اکتفا کیا گیا کہ دہشت گردی مشترکہ خطرہ ہے اور داعش کا خاتمہ مشترکہ کوششوں سے ہی ہو سکتا ہے اس لئے دہشت گردی کی لعنت کے خاتمے کے لئے جنگ جاری رہے گی ۔ آئی ایس پی آر کے مطابق مذاکرات میں شرکائ نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ اطلاعات کے تبادلے کے ذریعے بہترین نتائج حاصل کئے جا سکتے ہیں اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے تعاون بڑھانے سے متعلق کوششوں کو مربوط بنانا ہو گا جبکہ افغان وزارت دفاع میں پاکستان اور افغانستان کا دوطرفہ اجلاس بھی ہوا جس میں سرحد پار فائرنگ ، حملوں ، انسداد دہشت گردی سے متعلق اہم امور پر بات چیت اور پاک افغان سرحد کے ساتھ مربوط کارروائیوں اور قیدیوں کے تبادلے پر بھی گفتگو کی گئی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.