حسرت موہانی ‘بڑا بورڈ کے عوام سینیٹری عملے کے ہاتھوں پریشان

کراچی جدت ویب ڈیسک گجراتی قومی موومنٹ کے سربراہ گجراتی سرکار نے عوامی شکایات پر حسرت موہانی کالونی بلاک سی ‘ بڑا بورڈ ‘ منگھوپیروڈ سائٹ کا دورہ کرنے کے بعد علاقے کی حالت زار کے حوالے سے میڈیا کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتی نااہلی کی وجہ سے سوئپروں نے مافیا کی شکل اختیار کرلی ہے اور صفائی کیلئے عوام سے فی گھر 150روپے ماہوار وصول کرنے کے علاوہ دانستہ گٹر بند کردیئے جاتے ہیں اور پھر گٹروں کی صفائی اور نکاسی آب کے نام پر 500روپے فی گھر وصولی کے ذریعے عوام کو لوٹا جاتا ہے جبکہ بڑا بورڈ کے منتخب بلدیاتی نمائندے یوسی ‘ چیئرمین ‘ نائب چیئرمین اور منتخب کونسلرز عوام سے مکمل خلوص و ہمدردی کے باوجود حکومتی سرپرستی کی وجہ سے خاکروبوں ‘ بھنگیوں ‘ سوئپروں اور سینیٹری عملے کے سامنے بے بس ہیں جو بڑی دیدہ دلیری سے منتخب نمائندوں کے احکامات کی دھجیاں اڑاکرعوام کو لوٹنے میں مصروف ہیں اور جن گلیوں میں واقع گھروں کے عوام نے ان کی بلیک میلنگ کا شکار ہونے اور انہیں پیسے دینے سے انکار کردیا ہے وہ گلیاں اور سڑکیں برسات و سیوریج کے پانی میں ڈوبی ہوئی ہیں اسلئے ہماری حکمرانوں ‘ عوام ‘ متعلقہ اداروں اور احتساب و انصاف کے ذمہ داروں سے اپیل ہے کہ بڑا بورڈکے سینیٹری عملے کیخلاف تادیبی و احتسابی کاروائی کرکے بڑا بورڈ کے عوام کو ’’سوئپرو سینیٹری ورکر نامی ’’مافیا ‘‘ کے مظالم سے نجات دلائی جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.