/

کشمیر پریمیئر لیگ: بھارت کی غیر ملکی کھلاڑیوں کودھمکیاں

ویب ڈیسک ::اسلام آباد: کشمیر پریمیئر لیگ ابھی شروع نہیں ہوئی اور بھارت اوچھے ہتھکنڈوں پر آیا۔

 کشمیر پریمیئر لیگ میں آنے والے غیرملکی کھلاڑیوں کو بھارت کی جانب سے دھمکیاں دی جانے لگیں، واضح رہے کہ کشمیر پریمیر لیگ 6سے 16 اگست تک مظفرآباد میں کھیلی جائے گی اور لیگ کا فائنل 16 اگست ‏کو مظفرآباد میں ہی ہو گا۔

لیگ ذرائع کا کہنا ہے کہ 6 غیرملکی کھلاڑی کشمیر پریمیئر لیگ سے اچانک دستبردار ہو گئے

 بھارتی کرکٹ بورڈ کے عہدیدار نے کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے والے انٹرنیشنل کھلاڑیوں کو دھمکی دی تھی کہ اگر لیگ میں حصہ لیا تو ان کے لیے بھارت کے دروازے بند ہوں گے اور وہ کبھی بھارتی لیگ میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

بھارتی عہدیدار کی دھمکی پر کئی انٹرنیشنل کھلاڑی ہرشل گبز، مونٹی پنیسر، میٹ پرایئر ودیگر نے لیگ سے دستبرداری کا اعلان کردیا تھا۔

تاہم سابق سری لنکن اوپنر تلکارتنے دلشان نے بھارتی دھمکیوں کے باوجود کشمیر پریمیئر لیگ کھیلنے کا اعلان کردیا۔

کھلاڑیوں کو دھمکی دی گئی ہے کہ کشمیر لیگ میں گئے تو بھارت میں گھسنے نہیں دیں گے، کشمیر لیگ کھیلی تو آئندہ بھارت کی کرکٹ نہیں کھیل سکیں گے۔

لیگ ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارتی بورڈ کے سی ای او نے انگلش بورڈز کو بھی دھمکایا ہے۔شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ کشمیر پریمیئر لیگ میں چھپا ہوا ٹیلنٹ سامنے آئے گا، کے پی ایل کے انعقاد کے لیے ڈھائی سال سے کوشش جاری ہے

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں چیئرمین کشمیر کمیٹی شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ وفاق اور حکومت آزاد کشمیر بھرپور سپورٹ کررہی ہے، مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہے اور آزاد کشمیر میں کرکٹ ہورہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.