/

کینیڈین  وزیر اعظم نے عید اور حج کی مبارک باد دیکر پھر دل جیت لئے موقع۔۔۔ ایم کیوایم نے ’’کراچی بحالی‘‘کے نام پر نیا پیکیج مانگ لیا

کراچی جدت ویب ڈیسک متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے کراچی میں بارشوں کے باعث جانی و مالی نقصانات پر گہرے دکھ اور افسوس کااظہا رکیا ہے اور شہر میں شاہراہوں ، سڑکوں پر کمر تک پانی جمع ہونے ، نکاسی آب کی بد ترین صورتحال ، نالوں کے بھر جانے کے سبب عوام کو شدید مشکلات اور پریشانیوں کا سامنا کرنے پر گہری تشویش ظاہر کی ہے ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ کراچی میں بارشوں کی پیشنگوئی پہلے ہی کی جاچکی تھی لیکن حکومت سندھ کی نااہلی اور مجرمانہ غفلت کے باعث آج کراچی پانی میں ڈوب چکا ہے اور عوام کو شدید نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ حکومت سندھ کے وزرائ صرف اپنی عیاشیوں میں مصروف ہیں اور شہر کے وسائل اور اختیارات پر قابض ہوکر بیٹھ گئے ہیں ، حکومت سندھ نے میئر کراچی ، ڈپٹی میئر کراچی اور بلدیاتی نمائندوں کے اختیارات اور وسائل پر ناجائز قبضہ کررکھا ہے جس کے باعث بارشوں میں شہری حکومت وسائل اور اختیارات نہ ہونے کے سبب ہاتھ پر ہاتھ دھر کے بیٹھنے کے علاوہ کچھ نہیں کرسکی۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ سندھ حکومت کی جانب سے بارشوں سے قبل کسی قسم کے مثبت اقدامات بروئے کار نہ لانے سے ثابت ہوچکا ہے کہ سندھ حکومت اور اس کے وزرائ ایم کیوایم پاکستان دشمنی میں شہر کے عوام کو اپنی کھلی دشمنی کا نشانہ بنا رہے ہیں اور جمہوری دور میں عوام کوبارشوں میں تنہا چھوڑ کر اپنے ڈرائنگ روم میں مست اور عیاش زندگیاں بسر کررہے ہیں جبکہ عوام کھلے آسمان تلے بے یارو مدد گار پڑے ہیں ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ بارشوں کے باعث شہر میں کئی مکانات کی دیواریں اور چھتیں گر چکی ہیں ، لوگ بجلی کے کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہوچکے ہیں اور نظام زندگی مکمل طور پر مفلوج ہوچکا ہے ایسی صورتحال میں حکومت سندھ کی جانب سے خواب غفلت میں بیٹھے رہنا اور رین ایمرجنسی تک کے نفاذ کا اعلان نہ کرنا بد ترین حکومت کی نشانی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ شہر کے منتخب ارکان قومی وصوبائی اسمبلی اورحق پرست بلدیاتی نمائندے عوام کی خدمت اور انہیں مشکلات سے نکالنے کیلئے اپنی مدد آپ کے تحت سڑکوں اور شاہراہوں پر موجود رہے اور انہوں نے نکاسی آب ، بارشو ں میں پھنسی ہوئی گاڑیوں کو نکالا اور انہیں باحفاظت گھروں تک پہنچایا لیکن حکومت سندھ اور اس کی انتظامیہ جو تمام تر وسائل اور اختیارات پر قابض ہے ایسی تباہ ناک صورتحال میں بھی غائب ہے جس سے ایک مرتبہ پھر واضح ہوگیا ہے کہ سندھ حکومت کے نزدیک کراچی اور اس کے عوام کی کوئی حیثیت نہیں ہے اور اس نے شہر کراچی اور اس کے عوام کو بارشوں میں ڈوبانے کا عزم کررکھا ہے ۔رابطہ کمیٹی نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ کراچی میں بارشوں کے دوران سندھ حکومت کی مجرمانہ غفلت کا سنجیدگی سے نوٹس لیاجائے اور شہر میں ہونے والے جانی و مالی نقصانات اور درہم برہم نظام زندگی کی درستگی کیلئے خصوصی پیکیج کا اعلان فی الفور کیاجائے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.