کرم ایجنسی میں ڈرون حملہ، پاک امریکہ تعلقات مزید کشیدہ

اسلام آباد جدت ویب ڈیسک کرم ایجنسی میں ڈرون حملہ کے بعد پاک امریکہ تعلقات مزید نازک صورت حال اختیار کر گئے امریکی شخصیات کی پاکستان آمد کے پروٹوکول ضوابط سخت جبکہ ترکی اور چین سمیت سعودی پروٹوکول قواعد میں مزید نرمی کا فیصلہ کر لیا گیا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق فاٹا کی کرم ایجنسی میں امریکی ڈرون حملے کے بعد پاکستان نے فیصلہ کر لیا ہے کہ بغیر اطلاع ڈرون حملے پر پاکستان بھرپور احتجاج کرنے کا حق رکھتا ہے اس لئے اب احتجاج کی صورت میں پاکستان آنے والی امریکی شخصیات کے لئے پروٹوکول کے ضوابط سخت کئے جائیں گے ۔ پاکستان مین جس عہدے کا امریکی افسر آئے گا اسی عہدے کا پاکستانی عہدیدار ان سے ملاقات کرے گا ذرائع کے مطابق وزیر دفاع خرم دستگیر سے امریکی سینٹ کام کمانڈر جنرل جوزف ووٹل نے متعدد بار ملنے کی درخواست کی ہے لیکن خرم دستگیر نے مسلسل انکار کر دیا ہے کہ اب پاکستان کی امریکہ کے بارے میں وہ تعلقات نہیں رہے کیونکہ امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ کے پاکستان مخالف بیان اور ڈرون حملے نے پاکستانی قوم کو سخت مایوس کیا ہے ۔ دوسری جانب پاکستانی اتحادی ترکی اور چین کے علاوہ سعودی عرب کے لئے پروٹوکول قواعد میں خصوصی نرکی کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.