خطے میں امن و استحکام کےلئے تعاون جاری رکھنے پر پاک امریکا اتفاق

راولپنڈی جدت ویب ڈیسک آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دہشتگردی کےخلاف جنگ میں پاکستان کے کردار کو کمزور کرنے کےلئے افغانستان او ر امریکا میں بعض حلقوں کی جانب سے کی جانے والی الزام تراشی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اشتعال انگیزی کے باوجود پاکستان اپنا مثبت کردار جاری رکھے گا ¾ہمارے نزدیک دہشتگردی کو شکست دینا قومی مفاد میں ہے جبکہ امریکی کمانڈر جنرل جوئن ڈبلیو نیکلسن نے پاک فوج کی پیشہ وارانہ مہارت اور عوام کے عزم کی تعریف کرتے ہوئے اتفاق کیا ہے کہ خطے میں امن و استحکام کے لئے تعاون اور رابطے جاری رکھے جائیں گے۔ پیر کو آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے افغانستان میں امریکن فورسز کے کمانڈر جنرل جوئن ڈبلیو نیکلسن نے ملاقات کی۔ جی ایچ کیو راولپنڈی میں ہونے والی ملاقات کے دوران خطے کی سلامتی کی صورتحال اور سرحدی انتظام کے امور زیرغور آئے ۔ ملاقات میں امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل بھی موجود تھے ۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کے کردار کو کمزور کرنے کے لئے افغانستان او ر امریکا میں بعض حلقوں کی جانب سے کی جانے والی الزام تراشی پر تشویش کا اظہار کیا ۔انہوں نے کہا کہ یہ محض اتفاق نہیں ہے کہ اس موضوع کو ایسے وقت میں اٹھایا جا رہا ہے جب امریکا میں پالیسی پر نظر ثانی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اشتعال انگیزی کے باوجود پاکستان اپنا مثبت کردار جاری رکھے گا کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ دہشت گردی کو شکست دینا قومی مفاد میں ہے۔ریزولوٹ سپورٹ مشن اور افغانستان میں امریکن فورسز کے کمانڈر جنرل جوئن ڈبلیو نیکلسن نے پاک فوج کی پیشہ وارانہ مہارت اور عوام کے عزم کی تعریف کی ۔دونوں شخصیات نے اتفاق کیا کہ خطے میں امن و استحکام کے لئے تعاون اور رابطے جاری رکھے جائیں گے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.