پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ،عوام کی چیخیں نکل گئیں حکومت کو جلی کٹی سنانے کا سلسلہ جاری

جدت ویب ڈیسک ::پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ ،عوام کی چیخیں نکل گئیں، حکومت کو جلی کٹی سنانے کا سلسلہ جاری پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد ملک کے مختلف علاقوں میں پیٹرول پمپس پر پیٹرول اور ڈیزل کی فروخت روک دی گئی ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔وزارت خزانہ کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق عالمی مارکیٹ میں خام کی قیمتوں کو مد نظر رکھتے ہوئے فروری کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل کیا گیا ہے۔ یکم فروری 2018 سے پیٹرول کی قیمت 2 روپے 98 پیسے اضافے کے بعد 84 روپے51 پیسے فی لیٹر ہوگی۔دوسری جانب پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں حالیہ اضافے پر وزیراعظم کے ترجمان مصدق ملک نے کہا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اوگرا کی تجاویز کے برعکس کم اضافہ کیا گیا ہے، اوگرا نے ڈیزل کی قیمت میں 10 روپے 25 پیسے اضافے کی تجویز دی تھی لیکن قیمت 5 روپے 92 پیسے بڑھائی گئی، مٹی کے تیل کی قیمت 12 روپے 74 پیسے کے بجائے 5 روپے 94 پیسے جب کہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 11 روپے 72 پیسے کی بجائے 5 روپے 93 پیسے اضافہ کیا گیا۔نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 5 روپے 93 پیسے اضافے کے بعد 64 روپے 30 پیسے، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 5 روپے 92 پیسے اضافے کے بعد 95 روپے 83 پیسے جب کہ مٹی کے تیل کی نئی قیمت 5 روپے 94 پیسے اضافے کے بعد 70 روپے 26 پیسے فی لیٹر کردی گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.