//

شہباز ’’پرواز‘‘ نہ کرسکے !!! ایف آئی اے عمران خان کے حکم پر توہین عدالت کر رہی ہے,مریم اورنگزیب

ویب ڈیسک :: شہباز شریف کوعدالتی احکامات کےباوجود امیگریشن کی جانب سے سسٹم میں کلیئرنس نہ ہونےپرلندن جانے سے روک دیا گیا، اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو  نجی ایئر لائن کی پرواز سے آف لوڈ کردیاگیا۔مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہےکہ شہباز شریف کو روک کر شہزاد اکبر نے عمران خان کے حکم پر عمل کیا۔قطر ائیر لائن کی پرواز کیو آر 621 اپنے مقررہ وقت چار بجکر پچاس منٹ پر لاہور سے دوحہ کے لئے پرواز کرگئی۔ 

لاہور ائیرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ بلیک لسٹ کی قانونی حیثیت نہیں، شہزاد اکبر اور فواد چوہدری کے بیانات آرہے تھے کہ عدالتی حکم نہیں مانتے، اس لیے  شہزاد اکبر نے عمران صاحب کے حکم پرعملدرآمد کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی ترجیح شہبازشریف اورسیاسی مخالفین ہیں، چھوٹے لوگ بڑے عہدے پر آجائیں تو ایسا ہی ہوتا ہے لیکن گھبرانےکی ضرورت نہیں، عوام نے ان کو مسترد کردیا ہے، اب ان کو مسلم لیگ (ن) کے متحد ہونے کا خوف ہے۔

لیگی ترجمان کا کہنا تھا کہ کیا شہباز شریف کو روکنے سے عوام کی مشکلات ختم ہوجائیں گی، وہ آج نہیں تو دو دن بعد چلےجائیں گے، ایسی چھوٹی حرکتیں کرکےحکومت کیا ثابت کرنا چاہتی ہے۔اس موقع پر عطا تارڑ نے کہا کہ زلفی بخاری کوساتھ لے جانا ہو تو ڈیڑھ گھنٹے میں کلیئرنس ہوجاتی ہے، زلفی بخاری کا نام بلیک لسٹ سےکیسے نکلا تھا سب نے دیکھا جب کہ عدالتی حکم میں شہبازشریف کی روانگی اور واپسی کی تاریخیں درج ہیں، شہباز شریف دو مرتبہ بیرون ملک گئے اور واپس آئے،  ہم عدالتی حکم پرعملدرآمد کیلئے قانونی چارہ جوئی کا حق رکھتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ شہبازشریف کا نام ای سی ایل میں نہیں تھا، سپریم کورٹ نے نیب کی شہبازشریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنےکی استدعا مسترد کی جس کے بعد نئی لسٹ میں نام ڈال کر شہبازشریف کو روکنا اوچھا ہتھکنڈا ہے، کورٹ کےآرڈر کو نہیں ماننا توہین عدالت ہے، عدالت کے احکامات پر عمل درآمد کرانا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.