/

پیپلزپارٹی ہرعلاقے کی ترقی کا سوچتی ہے اور ہماری حکومت نے ہر شعبے میں کام کیا تاکہ خوشحالی آئے،نوجوانوں کو روزگار ملے

جدت ویب ڈیسک : مانسہرہ میں بلاول بھٹو کا دھواں دار خطاب، پیپلزپارٹی ایک وفاقی جماعت ہے اور ہر علاقے کی ترقی کا سوچتی ہے اور ہماری حکومت نے ہر شعبے میں کام کیا تاکہ خوشحالی آئے
مانسہرہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ہر میدان میں کام کیا ہے آئندہ بھی کرتے رہیں گے مانسہرہ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی کہہ رہے ہیں کے پی کے میں دیے جانے والے ٹھیکوں سے خان صاحب کا کچن اور ترین کا جہاز چل رہا ہے، صحت کے نظام کو پرائیوٹائز کردیا گیا اور اسکولوں کا سرکاری نظام بھی مکمل تباہ کردیا گیا۔بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ ہم آئندہ انتخابات میں بھرپور تیاری کے ساتھ اتریں گے اور غریب، مزدور، کسان کو ریلیف فراہم کریں گے، غربت کا خاتمہ کریں گے، نوجوانوں کو روزگار اور عورتوں کو مکمل تحفظ فراہم کریں گے کیونکہ میں اقتدار غریبوں اور عوام کے لیے چاہتا ہوں۔ چیئرمین پی پی نے کہا کہ اگر عوام نے میرا ساتھ دیا تو میں بھی انہیں مایوس نہیں کروں گا۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اور تحریک انصاف نے دہشت گردوں کے خلاف ہونے والے آپریشن کی مخالفت کی اور شدت پسندوں کو اپنا بھائی کہا، عوام کو سب یاد ہے اور انہوں نے آپ کی کارکردگی دیکھ کر آپ کا مکروہ چہرہ دیکھا لیا ہے، عمران خان صاحب آپ نے صوبے کے عوام کی حمایت میں کبھی آواز بلند نہیں کی اور نہ ہی اُن کے شناختی کارڈ بلاک ہونے پر کوئی آواز اٹھائی۔چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ ایک طرف نوازشریف اپنے آپ کو مظلوم ثابت کرنے کے لیے عوام کو سڑکوں پر لارہے ہیں تو عمران خان آئین میں ترمیم کے خلاف عوام کو سڑک پر لانے کا عندیہ دے چکےہیں، یہ دونوں جماعتیں اقتدار کی ہوس میں ہیں اور کرسی پر نظر رکھے ہوئے ہیں جبکہ پیپلزپارٹی کے پاس منشور ہے اور عوامی فلاح کے منصوبے ہیں۔بلاول بھٹو نے ایک بار پھر کہا کہ عوام سمجھ چکے ہیں کہ تحریک انصاف اور عمران خان نے انہیں صرف استعمال کیا، 2018 میرا پہلا الیکشن اور عمران خان کا آخری الیکشن ہوگا، پیپلزپارٹی بھٹو کےمسلم لیگ ن پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ میاں صاحب نے جی ٹی روڈ پر تماشہ لگایا اور اپنے آپ کو مظلوم ثابت کرنے کی کوشش کی، میاں صاحب آپ کو سپریم کورٹ نے ہمیشہ کے لیے نااہل قرار دیا ہے آپ شکل سے معصوم لگتے ہو مگر حقیقت اس کے برعکس ہے۔بلاول نے کہا کہ جب بھی نوازشریف کے تخت کو خطرہ پیش آیا انہوں نے پارلیمنٹ کی طرف دیکھنا شروع کیا اور جب حالات ٹھیک رہے تو ایوان میں آنا تک گورا نہیں کیا، عوام سے ووٹ لے کر نوازحکومت نے غریبوں کے لیے کچھ نہیں کیا بلکہ لوٹ کھسوٹ کے نظام کو تقویت دی۔خود اپنا شوکت خانم چلارہے ہیں ، نصرت بھٹو کا کینسر ہسپتال بند کر دیا گیا ہماری کوشش ہے کہ نوجوانوں کو روزگار ملے ،عمران خان روز جھوٹ بولتے ہیں کہ کے پی میں بچوں کا سکول بہتر ہوگیا ہے بلاول بھٹو زرداری پارٹی کی قیادت سنبھالنے کے بعد پہلی بار مانسہرہ میں جلسہ عام سے خطاب کریں گےسینٹرل ایگزیکٹوکمیٹی کے رکن شجاع سالم خان کا کہنا تھا کہ 70 کی دہائی کے بعد پیپلز پارٹی کی مرکزی قیادت کا ہزارہ ڈویژن میں پہلا جلسہ ہے۔، جلسے کی تیاریاں آخری مراحل میں داخل ہوگئی ہیں اور جلسہ گاہ کو رنگ برنگے پارٹی پر چموں ، بڑے بڑے بینرز اور ہورڈنگز سے سجایا گیا ہے۔پیپلز پارٹی کے چیر مین کے ہمراہ پارٹی کی مرکزی قیادت کی آمد بھی متوقع ہے جب کہ پی پی پی ہزارہ ڈویژن کے صدر سید احمد شاہ نے مانسہرہ ٹاون شپ میں منعقدہ جلسے میں 25 ہزار سے زائد افراد کی شرکت کا دعویٰ کیا ہے۔دوسری جانب جلسے کی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لئے پارٹی کے مرکزی رہنما سینیٹر شیری رحمان، سینیٹر روبینہ خالد، فیصل کریم خان کنڈی اور شجاع سالم خان مانسہرہ میں موجود ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published.