سینیٹرسسی پلیجونے آئین میں تبدیلی کی سازش سے پردہ اٹھادیا

ٹھٹھہ جدت ویب ڈیسک پاکستان پیپلز پارٹی کی سینیٹر سسئی پلیجو نے کہا ہے کہ ن لیگ 18ویں ترمیم کو رول بیک کر کے ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہے،ایسی آئینی ترمیم کے تحت نواز شریف پر تیسری بار وزیراعظم بننے پر عائد پابندی ختم ہوئی تھی۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے ٹھٹھہ میں صحافیوں، طلبہ اور وکلا کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ نئی وفاقی کابینہ میں ایسی وزارتوں کو بھی شامل کیا گیا ہے، جن کو 18ویں ترمیم کے بعد صوبوں کے ماتحت ہونا چاہئے۔ سسئی پلیجو نے اپنے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آدم شماری کے نتائج تاحال جاری نہیں کیئے گئے اور انہیں خدشہ ہے کہ نتائج میں ردوبدل نہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ آدم شماری، سی پی ایل سی، آئل، گیس اور ریگولیٹری اتھارٹیز جیسے معاملات کو کونسل برائے مشترکہ مفادات میں بحث کے بعد ہی طے کیئے جانا چاہئے۔ سسئی پلیجو نے کہا کہ پاکستان کا مطلب ایک صوبے کی چند ڈویژنز نہیں بلکہ تمام اکائیاں یعنی صوبے ملک کر فیڈریشن بناتے ہیں لیکن ن لیگ یہ تمام باتیں بھول جاتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی آدھی آبادی خواتین پر مشتمل ہے لیکن انہیں نہ فقط حکومتی فیصلہ سازی اور پالیسی سازی میں شامل کیا جائے بلکہ ان کی عزت، احترام اور تحفظ کو بھی ملحوظِ خاطر رکھا جائے۔ ایک خاتون جب سیاست میں حصہ لیتی ہے تو اسے بیشمار رکاوٹوں اور چیلنجز کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ سسئی پلیجو نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری ہی وہ رہنما ہیں، جو اپنی روشن خیال و ترقی پسند سوچ اور پالیسی کے باعث پاکستان کو مضبوط قیادت اور سیاسی بصیرت دے کر ملک کو عالمی سطح پر آگے لے جاسکتے ہیں۔ پی پی پی آئندہ انتخابات میں نہ فقط صوبوں بلکہ وفاق میں بھی حکومت بنائے گی۔ سسئی پلیجو نے سینیٹ کے 45 ویں یوم تاسیس کے موقع پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ایوانِ بالا کی بالادستی کے لیئے ابھی مزید کاوشیں درکار ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.