/

ایم کیو ایم کے ایم این اے سلمان مجاہد پر لڑکی کو ہراساں کرنے کا الزام

کراچی ویب ڈیسک: سلمان مجاہد ایم کیو ایم پاکستان کے رکن قومی اسمبلی پرایک لڑکی نے الزام عائد کیا نے سلمان مجاہدمجھے ہراساں کررہا ہے،میرا اس دندہ سے پیچھا چھڑایا جائے اور انسانیت کے ناطے انصاف فراہم کیا جائے،متاثرہ خاتون کی فریاد ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ دنوںپی ایس پی کو چھوڑ کر ایک بار پھر ایم کیو ایم پاکستان (فاروق ستار) میں شمولیت اختیار کرنے والے ایم این اے سلمان مجاہد بلوچ جنہوں نے گزشتہ دنوں پی ٹی آئی کے مرکزی کارکن پر اسلحہ تان لیا تھا اس واقعے کے بعد اب نئے تنازع کے ساتھ منظر عام پر آئے ہیں لڑکی انصاف کی فریاد لے کر انسانی حقوق کے سرگرم ادارے کے سربراہ صارم برنی پہنچ گئی۔مذکورہ خاتون نےاپنی درخواست میں الزام عائد کیا کہ ایم کیو ایم رکن قومی اسمبلی سلمان مجاہد نےپہلے مجھے بلیک میل کر کے زیادتی کا نشانہ بنایا اور 30 اکتوبر 2017 کو اغوا بھی کیا، میرے بھائی کو بھی گھر سے لے جاکر تشدد کر کے باہر پھینک دیا گیا۔خاتون کے مطابق سلمان مجاہد بلوچ نےدھمکی دی کہ اگر آواز اٹھائی تو تمہاری ویڈیو وائرل کردوں گا اور والدہ پر پستول تان کر اپنی بات منوانے کیلئے دبائو ڈالا؟۔لڑکی نے صارم برنی سے انصاف کی اپیل کرتے ہوئے قانونی مدد طلب کی۔ صارم برنی ٹرسٹ کے سربراہ نے مذکورہ لڑکی کی درخواست موصول ہونے کی تصدیق کردی ہےاور مزید کہا کہ رکن قومی اسمبلی کو درندہ ہے وہ شخص اس بچی کو زیادتی کا نشانہ بھی بناتا رہا۔سلمان مجاہد نے خفیہ طور پر لڑکی سے شادی کی اور پھر کچھ عرصے بعد ہوس پوری کرنے کے ساتھ ہی طلاق بھی دیدی،لڑکی نے کئی بار مقدمہ درج کرنے کی کوشش کی مگر پولیس نے کوئی ایف آئی آر درج نہیں کی زور دینے پر پولیس نے لڑکی کو الٹا گرفتار کرلیا تھا۔دوسری جانب سلمان مجاہد بلوچ کا مؤقف ہے کہ ’میری درخواست عدالت میں زیر سماعت ہے، خاتون نے ماں کے کینسر کا کہہ کر 40 لاکھ روپے لیے اور اب ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کرلی‘۔تاہم وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے صارم برنی سے رابطہ کیا اوراپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دیدی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.