امریکی شہر نیویارک میں سنہ 2001 میں ورلڈ ٹریڈ ٹاور پر ہونے والے دہشت گردانہ حملوں میں ملوث شخص شام سے گرفتار

دمشق : جدت ویب ڈیسک ::تفصیلات کے مطابق مشرق وسطیٰ میں واقع ملک شام کے شمالی حصّے سے کرد فورسز نے ایک شامی نژاد جرمن شہری کو گرفتار کیا ہے جو سنہ 2001 میں امریکا کے ورلڈ ٹریڈ ٹاور پر حملوں میں ملوث ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق حیدر امّار امریکا میں دہشت گردانہ کارروائیوں کے بعد مراکش میں روپوش ہوگیا تھا، جسے بعد میں امریکی سی آئی اے نے ایک آپریشن کے دوران گرفتار کرنے کے دو ہفتوں بعد ہی شامی حکام کو سونپ دیا گیا تھا۔جسے بعد میں شام کی اعلیٰ عدلیہ نے سنہ 2007 میں حیدر زمّار کو مصر کی اخوان المسلمون کا رکن ہونے کے جرم میں 12 برس قید کی سزا سناتے ہوئے جیل منتقل کردیا تھا۔شامی عدالت کی جانب سے سزا سنائے جانے کے 4 سال بعد ہی شام میں خانہ جنگی شروع ہوگئی تھی، جس کے بعد جیل میں موجود متعدد شدت پسند قید سے فرار ہوگئے تھے یا انہیں رہا کردیا گیا۔
جیل سے رہا ہونے والے بیشتر قیدیوں نے رہائی کے بعد شامی حکومت کے خلاف مسلح کارروائیاں کرنے والے گروہ دولت اسلامیہ میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔
کرد فورسز کے کمانڈر کا کہنا تھا کہ حیدر زمّار قید سے فرار ہونے کے بعد شام کی شدت پسند تنظیم کے باقاعدہ رکن کی حیثیت سے حکومت کے خلاف مسلح کرروائیاں کرتا رہا ہے۔ کرد فورسز کے کمانڈر کا کہنا تھا کہ جرمنے سے تعلق رکھنے والے 55 سالہ عسکریت پسند کی شناخت محمد حیدر زمّار کے نام سے ہوئی ہے، گرفتار شدت پسند سے تفتیش جاری ہے۔ کرد فورسز کے کمانڈر نے میڈیا کو بتایا کہ حیدر زمّار القائدہ کا رکن ہے جس نے سنہ 2001 میں امریکا میں دہشت گردی میں استعمال ہونے والے مسافر بردار طیاروں کو ہائی جیک کرنے والے دہشت گردوں کو بھرتی کیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.